اے کوفہ! یہ منظر گویا اپنی آنکھوں سے دیکھ رہا ہوں کہ مجھے اس طرح سے کھینچا جا رہا ہے جیسے بازار عُکاظ کے دباغت کئے ہوئے چمڑے کو اور مصائب و آلام کی تاخت و تاراج سے تجھے کچلا جا رہا ہے اور شدائد و حوادث کا تو مرکب بنا ہوا ہے ۔میں جانتا ہوں کہ جو ظالم و سرکش تجھ سے برائی کا ارادہ کرے گا اللہ ﷻ اسے کسی مصیبت میں جکڑ دے گا اور کسی قاتل کی زد پر لے آئے گا۔