اس میں عید قربان اور ان صفتوں کا ذکر کیا ہے ، جو گو سفند قربانی میں ہونا چاہئیں:

قربانی کے جانور کا مکمل ہونا یہ ہے کہ اس کے کان اٹھے ہوئے ہوں ( یعنی کٹے ہوئے نہ ہوں ) اور اس کی آنکھیں صحیح و سالم ہوں ،اگر کان اور آنکھیں سالم ہیں تو قربانی بھی سالم اور ہر طرح سے مکمل ہے اگرچہ اس کے سینگ ٹوٹے ہوئے ہوں اور ذبح کی جگہ تک اپنے پیر کو گھسیٹ کر پہنچے

 (علامہ رضی فرماتے ہیں کہ اس خطبہ میں منسک سے مراد ذبح کی جگہ ہے ) ۔