وہ اس طرح بے تحاشا میری طرف لپکے جس طرح پانی پینے کے دن وہ اونٹ ایک دوسرے پر ٹوٹتے ہیں کہ جنہیں ان کے سار بان نے پَیروں کے بندھن کھول کر کھلا چھوڑ دیا ہو، یہاں تک کہ مجھے یہ گمان ہونے لگا کہ یا تو مجھے ماڑ ڈالیں گے یا میرے سامنے ان میں سے کوئی کسی کا خون کر دے گا۔

 میں نے اس امر کو اندر باہر سے الٹ پلٹ کر دیکھا، تو مجھے جنگ کے علاوہ کوئی صورت نظر نہ آئی ، یا یہ کہ محمد ﷺ کے لائے ہوئے احکام سے انکا ر کر دوں لیکن آخرت کی سختیاں جھیلنے سے مجھے جنگ کی سختیاں جھیلنا سہل نظر آیا اور آخرت کی تباہیوں سے دنیا کی ہلاکتیں میرے لئے آسان نظر آئیں۔