تازه ترین

26۔ اللہ کا کنبہ

26۔ اللہ کا کنبہ

عِيَالُهُ الْخَلاَئِقُ۔ (خطبہ ۸۹) ساری مخلوق اللہ کا کنبہ ہے۔ انسان اگر اپنی عظمت کو جاننا چاہے تو دو لفظوں کا یہ جملہ ایک پوری کتاب بن سکتا ہے۔ انسان جب بطور مخلوق و انسان اپنی عظمت جان لے گا تو دوسری مخلوق خدا کی اہمیت بھی اس کے لیے اس فرمان سے واضح ہو […]

مزید پڑھیں ...

25۔اپنی حفاظت

25۔اپنی حفاظت

زِنُوا أَنْفُسَکُمْ مِنْ قَبْلِ أَنْ تُوزَنُوا۔ (خطبہ۸۸) اپنے نفسوں کو خود وزن کرو اس سے پہلے کہ کوئی وزن کرے۔ کامیاب انسان وہی ہو سکتا ہے جو سب سے پہلے اپنی اصلاح کرے۔ اصلاح کے چند اصول بتاتے ہوئے امیرالمؤمنینؑ ارشاد فرماتے ہیں، اپنا وزن کرو اس سے پہلے کہ کوئی آپ کا وزن کرے۔ […]

مزید پڑھیں ...

24۔ عظیم راہنما

24۔ عظیم راہنما

أَرَيْتُکُمْ کَرَائِمَ الْأَخْلاَقِ مِنْ نَفْسِي۔ (خطبہ۸۵) کیامیں نے آپ کو پاکیزہ اخلاق پر عمل کر کے دکھایا ہے؟ کمال کی منزلوں کے حصول کے لیے با کمال راہنماؤں کی اطاعت و پیروی لازم ہے۔ اس لیے کمال کے مسافر کو پہلے راہنما تلاش کرنا چاہیے۔ اس جملے میں امیرالمؤمنینؑ نے خود کو بطور راہنما پیش […]

مزید پڑھیں ...

23۔نورِ یقین

23۔نورِ یقین

فَهُوَ مِنَ الْيَقِينِ عَلَي مِثْلِ ضَوْءِ الشَّمْسِ۔ (خطبہ ۸۵) وہ یقین کی وجہ سے ایسے اجالے میں ہیں جو سورج کی چمک دمک کے مانند ہے۔ انسان ساری زندگی جو سعی و کوشش کرتا ہے، مال و دولت اکھٹی کرتا ہے ،منصب و عہدہ کا طلب گار رہتا ہے وہ ان چیزوں کو عزت کا […]

مزید پڑھیں ...

22۔سچائی

22۔سچائی

اَلصَّادِقُ عَلَى شَفَا مَنْجَاةٍ وَكَرَامَةٍ۔ (خطبہ۸۴) سچا شخص نجات و عزت کی بلندیوں پر فائز ہوتا ہے۔ انسان ہی ایسی مخلوق ہے جسے سچا یا جھوٹا کہا جا سکتا ہے ۔ جو کبھی سچ بولتا ہے اور کبھی جھوٹ سے کام لیتا ہے۔ سچ یعنی حقیقت و واقعیت کے مطابق بات یا عمل کرنا اورجھوٹ […]

مزید پڑھیں ...