نوشته هایی با برچسب "کی نظر میں"

خطبۃ المتقین از نہج البلاغہ

خطبۃ المتقین از نہج البلاغہ

بسم اللہ الرحمن الرحیم امیر المؤمنین، امام المتقینؑ  کے بکھرے ہوئے  علمی جواہر پاروں  کو ۴۰۰ ہجری میں  علامہ سید رضیؒ نے جمع کر کے ’’نہج البلاغہ‘‘ نام رکھا۔اس دور سے آج تک علم کے پیاسے  اس سے  علمی  پیاس بجھا رہے ہیں۔ نہج البلاغہ کیا ہے؟ علی امیر المؤمنینؑ کی معرفت کا بہترین ذریعہ […]

ادامه مطلب ...

نھج البلاغه بعض متعصبين کي نگاه ميں

نھج البلاغه بعض متعصبين کي نگاه ميں

علامه سيد رضي کے بعد تقريبا دو ڈھائي سو برس تک نھج البلاغه کے خلاف کوئي آواز اٹھتے هوئے نظر نهيں آئي هے بلکه متعدد اهل سنت نے اس کي شرحيں لکھي هيں جيسے ابوالحسن علي ابن ابي القاسم بيھقي متوفي ۵۶۵ ھ امام فخرا الدين متوفي ۶٠۶ ابن ابي الحديد معتزلي متوفي ۶۵۵ و […]

ادامه مطلب ...

قناعت نہج البلاغہ کی نظر میں

قناعت نہج البلاغہ کی نظر میں

قناعت  قناعت یعنی انسان جس حال میں ہے اس سے راضی ہو خدا کی طرف سے مقرر کے گئے رزق و روزی پہ ہر حال میں راضی اور خوشنود ہو مکتب نہج البلاغہ قناعت کے مجسمے کے نورانی کلمات سے منور ہے امام علی اخلاقیا ت کے اس حصہ کو زندگی کے ہر پہلو میں […]

ادامه مطلب ...

صداقت نہج البلاغہ کی نظر میں

صداقت نہج البلاغہ کی نظر میں

صداقت  نہج البلاغہ میں مدارج اخلاق اور انسان کے اقدا ر کو مد نظر رکھتے ہوئے اسکے ایک خاص اخلاقی زاوئے کو نظر میں رکھا گیا جس میں نہ اسکے دین کو دیکھا جا تا ہے اور نہ ہی اسکے مذہب کو ۔بلکہ اخلاق کے اہم ارکان میں اسکا حساب ہو تا ہے جی ہاں […]

ادامه مطلب ...

عزت نفس نہج البلاغہ کی نظر میں

عزت نفس نہج البلاغہ کی نظر میں

عزت نفس مکتب نہج البلاغہ کی اخلاقیات کا ایک اہم اور بنیادی اخلاق عزت نفس اور انسان کی خودی ہے انسان کی کرامت اور شرافت کو اسی کے گرو میں پہچانا جاتا ہے امام عالی مقام سے اس بارے میں چند اقوال ذکر کر تے ہیں آپ فرماتے ہیں: الف ۔”واکرم نفسک عن کل دنیة […]

ادامه مطلب ...
  • صفحه 1 سے 2
  • 1
  • 2
  • <